سه شنبه , دسامبر 11 2018
تازہ ترین
مرکزی صفحہ / مشہد و قُمِ مقدس / حرمِ مقدس امام موسیٰ رضا (ع)۔ / عزاداری کے ساتھ ساتھ ہاتھوں میں اسلحہ لے کر حقیقی اسلام کی حفاظت کر سکتے ہیں ’’ سید ھاشم الحیدری‘‘
اقدامات غيرانساني رژيم هاي آل سعود و آل خليفه صبر شيعيان را لبريز خواهد کرد

عزاداری کے ساتھ ساتھ ہاتھوں میں اسلحہ لے کر حقیقی اسلام کی حفاظت کر سکتے ہیں ’’ سید ھاشم الحیدری‘‘

؛ امام رضا(ع) کی نورانی بارگاہ میں زائرین اور مجاورین کے عظیم اجتماع کے دوران جوکہ بحرین کے مظلوم شہداء کی یاد میں رواق امام خمینیؒ میں برگزار کیا گیا عراق سے تعلق رکھنے والے اس مشہور اور بزرگ عالم دین نے کہا: آج اسلامی مجاھدوں اور رزمندوں کی جانفشانی اور ایثارگری نے داعش اور تکفیریوں اور دہشتگردوں کے گروپوں کو زمین گیر اور بے بس کر دیا ہے۔
انہوں نے وضاحت دیتے ہوئے کہا: مقاومت کے اس میدان میں سید حسن نصر اللہ، کمانڈر قاسم سلیمانی اور سید عبد المالک الحوثی جیسے افراد ہیں جو کہ ولی امر مسلمین جھان، حضرت آیت اللہ العظمیٰ الخامنہ ای کی رھبری میں مظلوموں کو ان کا حق دلوانے کے لئے ہمیشہ حاضر اور تیار ہیں یہ افراد جو کہ تحریک حسینی اور مکتب عاشورا سے درس لیتے ہوئے اپنی جانوں کو ہاتھوں میں لئے ہوئے ہیں تاکہ ان مناطق میں امنیت قائم کر سکیں۔
عراق کی مقاوت اسلامی اور حزب اللہ کے اس رھبر نے حلب کی آزادی کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا: تکفیریوں اور دہشتگردوں کے افراد ذلت وخواری کے ساتھ حلب اور اطراف حلب کو چھوڑنے پر مجبور ہوگئے اور پھر اک بار اللہ کا کیا ہوا وعدہ پورا ہوا۔
سید ھاشم الحیدری نے اپنی گفتگو کو جاری رکھتے ہوئے کہا: ہم سب حسینی ہیں اس سال اربعین کے موقع پر امام حسین علیہ السلام کے لاکھوں شیعوں اور عاشقوں کو دیکھا جو کہ دنیا کے مختلف ممالک سے آئے ہوئے تھے۔ ہم سب یہ اعتقاد رکھتے ہیں کہ آج مرجعیت اور ولایت فقھیہ کے سایہ میں اھل بیت علیھم السلام کے مصائب پرگریہ و زاری اور عزاداری کے ساتھ  ساتھ ہاتھوں میں اسلحہ لے کر اور جہاد کر کے اسلامی ثقافت اور حقیقی اسلام کی حفاظت کر سکتے ہیں۔
انہوں نے کہا: ہمارے مدّمقابل داعش ہے جس کو زمانے کا یزید سربراہی کر رہا ہے اور ان ظلم و جنایات اور قبیح اقدامات کو انجام دلوانے والا سب سے بڑا شیطان امریکہ ہے۔
اس بزرگ عالم دین نے کہا کہ ایران اس خطّے اور جہان میں بہت زیادہ دینی اور سیاسی اثر رکھتا ہے انہوں نے بتایا: کوئی بھی ایران کا مقاومت کے میدان میں حاضر ہونے کا منکر نہیں ہے ہم تمام جہان اسلام کے اس ام القرای کے ساتھ ہیں کیونکہ بقول امام راحلؒ: اسلامی جمہوریہ ایران کی حفاظت جو کہ تمام مسلم ممالک کا دل ہے سب سے بڑا واجب ہے۔
انہوں نے اپنی گفتگو کے دوسرے حصّے میں آل سعود اور آل خلیفہ کے بحرین اور یمن پر ظالمانہ اقدامات کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا: بحرین کی مظلوم عوام جو کہ ہاتھوں میں اسلحہ نہ ہونے کے باوجود اس خطّے کی ظالمانہ حکومت اور اس کے مزدوروں نے ان پر وحشیانہ اور ظالمانہ حملے کئے اور آج بھی بغیر اسلحہ کے ثابت قدمی سے لڑ رہے ہیں۔
انہوں نے کہا: اس خطّے میں بسنے والے شیعوں اور انصاف پسند مسلمانوں اور آزادی کی حمایت کرنے والوں کے صبر کےپیمانے لبریز ہو چکے ہیں اور اگر اسی طرح سے میزائلوں کے حملے جاری رہے تو ان کی مدد کو پہنچے گے اس وقت آل سعود اور آل خلیفہ کے صفحہ ہستی سے ختم ہونے میں دیر نہیں لگے گی۔
مقاومت اور ثابت قدمی کی حمایت کرنے والے اس بزرگ عالم دین نے اپنی گفتگو کے آخر میں کہا: عاشورا کے مکتب کی پیروی کرتے ہوئے ہم نے ہزاروں شہید اور جانباز دے کر دنیا پر یہ ثابت کر دیا ہے کہ اسلام کی حفاظت اور مظلوموں کو ان کا حق دلوانے کے لئے جس کا نشان آج آیت اللہ شیخ عیسیٰ قاسم جیسے افراد ہیں اپنے اھداف و مقاصد سے ہرگز پیچھے نہیں ہٹے گے۔
سید ھاشم الحیدری کی گفتگو ختم ہونے کے بعد امام رضا علیہ السلام کی نورانی بارگاہ کے رواق امام خمینیؒ میں زائرین اور مجاورین کی موجودگی میں بیداری اسلامی کے شہداء کی یاد میں دعای کمیل کے مراسم برگزار ہوئے جو کہ اھل بیت علیھم السلام کی مدح وثنا کرنے والے حاج عباس حیدر زادہ کے توسط سے اس دعا کو پڑھا گیا۔

یہ بھی ملاحظہ ہو

nr371lk0

مشہد مقدس :زیر سایہ خورشید قافلے دنیا کے 2000مقامات کے لیے روانہ ہوگئے

حضرت امام علی رضا علیہ السلام کے نام مبارک سے عظیم ترین عوامی ثقافتی خدمت …

پاسخ دهید

نشانی ایمیل شما منتشر نخواهد شد. بخش‌های موردنیاز علامت‌گذاری شده‌اند *