پنجشنبه , سپتامبر 19 2019
تازہ ترین
مرکزی صفحہ / مشہد و قُمِ مقدس / حرمِ مقدس امام موسیٰ رضا (ع)۔ / حجاب دل کی پاکیزگی کا سبب اور تقویٰ کا مظہر ہے,متولی حرم امام رحا
37348

حجاب دل کی پاکیزگی کا سبب اور تقویٰ کا مظہر ہے,متولی حرم امام رحا

ستان قدس رضوی کے متولی نے مرد اور عورت کے روابط کے دوران شرعیت کی حدود کی رعایت کرتے ہوئے حجاب کو اھمیت دینے اور اس پر پابند ہونے پر تاکید کرتے ہوئے کہا کہ حجاب دل کی پاکیزگی کا سبب اور تقویٰ کا مظہر ہے۔
آستان نیوز کی رپورٹ کے مطابق؛ مجلس خبرگان رھبری کے اعلیٰ رکن نے منگل کی رات 24 جنوری کو سورہ احزاب کی تفسیر کا مسجد جامع گوھر شاد کے شبستان گرم میں درس دیا اور اس سورہ شریفہ کی 53 آیۃ کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا: اس آیت میں رسول خدا(ص) اور اس کے خاندان سے معاشرت کے آداب بیان ہوئے ہیں اور اس میں خداوند متعال فرماتا ہے: اے ایمان والو خبردار پیغمبر(ص) کے گھروں میں اس وقت تک داخل نہ ہونا جب تک تمہیں کھانے کے لئے اجازت نہ دے دی جائے اور اس وقت بھی برتنوں پر نگاہ نہ رکھنا جب دعوت دے دی جائے تو داخل ہو جاؤ اور جب کھا لو تو فوراً منتشر ہو جاؤ اور باتوں میں نہ لگ جاؤ کہ یہ بات پیغمبر(ص) کو تکلیف پہنچاتی ہے اور وہ تمہارا خیال کرتے ہیں حالانکہ اللہ حق کے بارے میں کسی بات کی شرم نہیں رکھتا اور جب ازواج پیغمبر(ص) سے سوال کرو تو پردے کے پیچھے سے سوال کرو کہ یہ بات تمہارے اور ان کے دلوں کے لئے زیادہ پاکیزہ ہے اور تمہیں حق نہیں ہےکہ خدا کے رسول کو اذیت دویا ان کے بعد کبھی بھی ان کی ازواج سے نکاح کروکہ یہ بات خدا کے نزدیک بہت بڑی بات ہے۔
انہوں نے مزید یہ کہا: دوسرے کے گھروں میں داخل ہونے کی لئے اجازت کا مانگنا فقط پیغمبر اکرم(ص) کے گھر سے مختص نہیں ہے، بلکہ جیسا کہ سورہ نور میں بھی بیان ہوا ہے’’ لا تدخلوا بیوتاً غیر بیوتکم حتّی تستأنسوا، اے ایمان والو خبرداراپنے گھروں کے علاوہ کسی کے گھر میں داخل نہ ہونا جب تک کہ صاحب خانہ سے اجازت نہ لے لواور انہیں سلام نہ کر لو‘‘
حوزہ علمیہ خراسان کے اس اعلیٰ رکن نے نامحرموں کے ساتھ روابط رکھنے میں شرعیت کی حدود کو رعایت کرنا اور حرام کاموں سے بچنے پر قرآن کریم کی تاکیدات کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا: وہ خطابات جو اس آیۃ کریمہ میں پیغمبر اکرم(ص) کی ازواج کے بارے میں آئے ہیں درحقیقت وہ تمام مسلمان خواتین اور مردوں سے مربوط ہیں اس لئے دلوں کی پاکیزگی اور تقویٰ کی حفاظت کے لئے حجاب ضروری ہے۔
آستان قدس رضوی کے متولی نے اپنی بعض دوسری گفتگو میں چند ایک آیات کے بعض نکات کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ ایمان کا لازمہ معاشرہ کے آداب کی رعایت ہے انہوں نے کہا: سورہ احزاب کی 53 آیت سے یہ حاصل ہوتا ہے کہ گھروں میں سکون کا حق سب کے لئے قابل احترام ہے۔ مہمانوں کو دعوت دینا پیغمبر اکرم(ص) کی سیرت تھی اور یہ دین اسلام کی جامعیت پر دلیل ہے کہ مہمانوں کی دعوت سے لے کر حکومتی مسائل تک کو بیان کیا ہے۔ پیغمبر اکرم(ص) وقت کو ضایع کرنے والی گفتگو سے تکلیف ہوتی تھی۔ تکلیف دینا ضروری نہیں کہ ہمیشہ ظاہری اور جسمی ہو، اخلاقی اور روحی روانی تکالیف کا دینا بھی ایک طرح کی تکلیف ہے۔ خواتین اور مردوں کے روابط کے دوران تقویٰ اور دلوں کی پاکیزگی کو مدّنظر رکھا جائے، نامحروں کی نظریں ایک دوسرے کے دلوں میں اثر کر سکتی ہیں حجاب کے بغیر نامحرموں سے رابطہ رکھنا رسول مکرم اسلام کو تکلیف دینے کا سبب ہے’’ وماکان لکم ان تؤذوا رسول اللہ‘‘۔
مجلس خبرگان رھبری کے نمائندہ نے اپنی گفتگو کے دوسرے حصے میں دوسرے افراد کی شخصی حدود کی رعایت کو لازم قرار دیتے ہوئے کہا: آج یورپین ممالک اس بات کے دعویدار ہیں کہ اس جدید دور میں جو کہ ارتباطات اور اطلاعات کو دور ہے اس میں شخصی موضوعات اور شخصی حدود کا وجود نہ ہونے کے برابر ہےجب کہ یہ بات ہمارے اسلام کے ثقافتی اور دینی اصولوں کے ساتھ ذرہ برابر بھی سنخیّت نہیں رکھتی ۔
آستان قدس رضوی کے متولی نے آخر میں اس مطلب پر تاکید کرتے ہوئے کہا کہ اصل اسلام اس پر ہے کہ افراد کے شخصی مسائل عمومی نہ ہوں انہوں نے کہا: اگر کسی شخص کے بارے میں محرمانہ گفتگو سنتے ہو یا کسی کی فردی بات سے آگاہ ہوتے ہو، تو اس کا ہرگز یہ مطلب نہیں ہے کہ تم دوسروں کے اعتماد سے غلط فائدہ اٹھاؤ اور خصوصی محفل کو عمومی محفل کا رنگ دے دو۔ جو افراد دوسروں کی خطاؤں کو نہیں راز میں نہیں رکھتے ان کے لئے اسلام نے بہت سخت سزائیں مقرر کی ہیں اوراسلام نےہمیں دوسروں کی زندگی میں مداخلت نہ کرنے کی سفارش فرمائی ہے۔
قابل ذکر ہے کہ اگلے ہفتہ سے قرآن کریم کی تفسیر کے جلسات کا یہ سلسلہ جو آستان قدس رضوی کے متولی کے توسط سے ہے بدھ اور جمعرات کی درمیان رات کو نماز مغربین کے بعد مسجد جامع گوھر شاد کے روضہ شبستان میں برگزار کیا جائے گا۔

یہ بھی ملاحظہ ہو

مراسم تکريم و معارفه 2

حرم مطہر رضوی کے خدام کا جذبہ انسان دوستی اور احساس ذمہ داری قابل قدر ہے:متولی آستان قدس

آستان قدس رضوی کے متولی  حجت الاسلام احمد مروی نے کہا ہے  کہ  حالیہ سیلاب …

پاسخ دهید

نشانی ایمیل شما منتشر نخواهد شد. بخش‌های موردنیاز علامت‌گذاری شده‌اند *