چهار شنبه , نوامبر 20 2019
تازہ ترین
مرکزی صفحہ / کربلاء معلیٰ / حرمِ مقدس امامِ حُسین (ع)۔ / طے شدہ لائحہ عمل مکمل طور پر کامیاب رہا (روضہ مبارک حضرت عباس{ع})
9e733e5fc601eaef9303c8f514c6ee7e

طے شدہ لائحہ عمل مکمل طور پر کامیاب رہا (روضہ مبارک حضرت عباس{ع})

عاشوراء کے دن عزاداری کے جلوسوں اور عزاء طویریج (ركضة طويريج) کے جلوس کے اختتام کے بعد روضہ مبارک حضرت عباس(ع) کے ڈپٹی سیکرٹری بشیر محمد جاسم ربیعی نے الکفیل نیٹ ورک کے نمائندے سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ حضرت عباس(ع) کے روضہ مبارک نے عشرہ محرم اور عاشوراء کے حوالے سے امن و امان اور دیگر خدماتی امور کے لیے جو طریقہ کار اور لائحہ عمل تیار کیا تھا وہ مکمل طور پر کامیاب رہا ہے اور کسی بھی حوالے سے کوئی ناخوشگوار واقعہ پیش نہیں آیا اور نہ ہی کسی بھی حوالے سے کسی خلل اور مشکل کا سامنا ہوا ہے۔
ربیعی کا کہنا تھا کہ ملکی سطح پر امن و امان کی صورت حال، دہشت گردوں کی دھمکیوں، سیکورٹی اداروں کی جںگ میں مصروفیت اور بہت سے دیگر سیاسی و غیر سیاسی امور کی وجہ سے یہ سال گزشتہ سالوں کی نسبت بہت مختلف ہے لیکن اس کے باوجود بھی سیکورٹی اور تمام انتظامات کے حوالے سے بھرپور کامیابی حضرت امام حسین(ع) اور حضرت عباس(ع) کے حرموں کے خدام، رضاکاروں اور کربلا کی حکومت کی مشترکہ کاوشوں اور پر خلوص جدوجہد کا نتیجہ ہے اور اس سلسلہ میں تعاون کرنے والے تمام احباب کا ہم دل کی گہرائیوں سے شکریہ ادا کرتے ہیں۔

یہ بات واضح رہے عاشوراء کے المناک واقعہ کا پرسہ پیش کرنے اور عزاداری کے لیے کئی ملین زائرین کربلا آئے ہیں اور اس سال عاشوراء کے حوالے سے عزاداری کے قیام اور زائرین کے لیے کھانے پینے اور دیگر انتظامات و مطلوبہ سہولیات فراہم کرنے کے عمل میں ہزاروں حسینی انجمنوں اور مختلف تنظیموں نے حصہ لیا اور سینکڑوں میڈیا ہاؤسس نے کربلا میں عاشوراء کے دن ہونے والی عزاداری کو براہ راست نشر کیا۔

یہ بھی ملاحظہ ہو

An Iraqi Shi'ite Muslim boy kisses a poster of the Ayatollah Ali al-Sistani in the town of Karbala, some 110 km south from the Iraqi capital Baghdad, early February 6, 2004. Iraq's most powerful Shi'ite cleric, Ayatollah Ali al-Sistani, survived an assassination bid on Thursday when gunmen opened fire on his entourage in the sacred streets of Najaf, a security aide said. The assassination attempt comes days before a team of United Nations electoral experts is due to arrive in the country to assess the feasibility of holding early elections along the lines that Sistani has demanded. REUTERS/Ali Jasim  PP04020063 OP/CRB - RTRC0XD

آیت‌الله سیستانی کا عراق میں حالیہ مظاہروں کے حوالے سے تحقیقات کا مطالبہ

نامور مرجع تقلید نے اعلی حکام سے مطالبہ کیا کہ حالیہ مظاہروں اور ذمہ داروں …

پاسخ دهید

نشانی ایمیل شما منتشر نخواهد شد. بخش‌های موردنیاز علامت‌گذاری شده‌اند *