سه شنبه , دسامبر 11 2018
تازہ ترین
مرکزی صفحہ / کربلاء معلیٰ / حرمِ مقدس امامِ حُسین (ع)۔ / ہاتھوں میں شمعیں لیے حضرت زینب(ع) کو پرسہ پیش کرتے عزادار
5955-777ceb9c5397cbb2dffbac

ہاتھوں میں شمعیں لیے حضرت زینب(ع) کو پرسہ پیش کرتے عزادار

السلام عليك يا أبا عبد الله .. وعلى الأرواح التي حلت بقنائك

السلام على الحسين

وعلى اصحاب الحسين

وعلى اولاد الحسين

وعلى كل من بذلوا انفسهم دون الحسين عليه السلام

پوری تاریخِ انسانیت نے شام غریباں سے بڑھ کر غم والم اور کرب بھری شام نہیں دیکھی اس شام خاندان رسالت پر ظلم و ستم کی انتہا کر دی گئی اس شام یزیدی فوجوں نے شہداء کربلا کے لاشوں پر گھوڑے دوڑائے، خانوادہ رسول صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی خواتین کے خیموں کو لوٹ کر آگ لگا دی، سارا دن اپنے عزیزوں کو شہید ہوتا دیکھنے والی بے سہارا خواتین اور خوفزدہ بچے جلے خیموں کی راکھ کے پاس رات گزارنے پہ مجبور ہوئے، گیارہ محرم کی رات خانوادہ رسول صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی خواتین اور بچوں پر ظلم و ستم کے وہ پہاڑ ڈھائے گئے جن کے کرب و الم سے کسی بھی انسان کا مر جانا کوئی تعجب کی بات نہیں۔

اس شام کے بعد نام نہاد مسلمانوں کے ہاتھوں ہر حوالے سے اُجڑ جانے والے خاندان رسول کی بے سہارا خواتین اور یتیم ہو جانے والے معصوم بچوں کی دیکھ بھال کی تمام تر ذمہ داریاں حضرت زینب(ع) کے کاندھوں پہ آ گئيں۔

تاریخ گواہ ہے کہ حضرت زینب(ع) نے اسیری کے دوران اور رہائی کے بعد ناصرف اس اُجڑے ہوئے خاندان رسول(ص) کا ہر ممکن طریقہ سے خیال رکھا بلکہ اپنے مظلوم بھائی کے مشن کو بھی اپنے خطبوں اور اپنی سیرت کے ذریعے آب حیات سے سیراب کیا۔

یہ بھی ملاحظہ ہو

99a865400755cfaee2f15b313c874bd1

اقوام متحدہ کے ہیڈکواٹر میں کربلا کے مقدس روضوں کے بغیر یہ کامیاب اور تاریخی کانفرنس ممکن نہ تھی

یو یارک میں خوئی فاؤنڈیشن کے ڈائریکٹر شیخ فاضل السہلانی نے الکفیل انٹر نیشنل نیٹ …

پاسخ دهید

نشانی ایمیل شما منتشر نخواهد شد. بخش‌های موردنیاز علامت‌گذاری شده‌اند *