دوشنبه , دسامبر 9 2019
تازہ ترین
مرکزی صفحہ / کربلاء معلیٰ / حرمِ مقدس امامِ حُسین (ع)۔ / اربعین حسینی سے متعلق ایران اور عراق کا مشترکہ سیکورٹی اجلاس
z

اربعین حسینی سے متعلق ایران اور عراق کا مشترکہ سیکورٹی اجلاس

کربلائے معلی میں ایران اور عراق کی اعلی سطحی سیکورٹی میٹنگ میں اربعین حسینی کے سیکورٹی پلان کا جائزہ لیا گیا ۔

اہل بیت(ع) نیوز ایجنسی۔ابنا۔ پیرکو کربلائے معلی میں انجام پانے والی اس اعلی سطحی نشست میں ایران اورعراق کے وزرائے داخلہ نے حصہ لیا۔ ایران کے وزیر داخلہ عبدالرضا رحمانی فضلی اورعراق کے وزیر داخلہ یاسین الیاسری نے ، اربعین حسینی کے موقع پر زائرین کی رفت وآمد اور انہیں فراہم کی جانے والی سہولتوں کا جائزہ لیا   اس نشست میں اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیر داخلہ نے اربعین حسینی کے بہتر سے بہتر انتظامات کے لئے عراقی حکام کی کوششوں کو قابل تعریف قرار دیا ۔

ایران کے وزیر داخلہ نے کہا کہ محرم اور صفر میں ایرانی زائرین کے لئے ویزا ختم کئے جانے سے ایرانی زائرین کی تعداد میں نمایاں اضافہ ہوا ہے ۔

ہر سال اربعین حسینی کے موقع پر عراق کے مختلف علاقوں اور دنیا بھر سے کروڑوں زائرین کربلائے معلی پہنچتے ہیں ۔ اربعین حسینی کے موقع پر کربلا جانے والے غیر ملکی زائرین میں سب سے بڑی تعداد ایرانی زائرین کی ہوتی ہے۔

یہ بھی ملاحظہ ہو

An Iraqi Shi'ite Muslim boy kisses a poster of the Ayatollah Ali al-Sistani in the town of Karbala, some 110 km south from the Iraqi capital Baghdad, early February 6, 2004. Iraq's most powerful Shi'ite cleric, Ayatollah Ali al-Sistani, survived an assassination bid on Thursday when gunmen opened fire on his entourage in the sacred streets of Najaf, a security aide said. The assassination attempt comes days before a team of United Nations electoral experts is due to arrive in the country to assess the feasibility of holding early elections along the lines that Sistani has demanded. REUTERS/Ali Jasim  PP04020063 OP/CRB - RTRC0XD

آیت‌الله سیستانی کا عراق میں حالیہ مظاہروں کے حوالے سے تحقیقات کا مطالبہ

نامور مرجع تقلید نے اعلی حکام سے مطالبہ کیا کہ حالیہ مظاہروں اور ذمہ داروں …

پاسخ دهید

نشانی ایمیل شما منتشر نخواهد شد. بخش‌های موردنیاز علامت‌گذاری شده‌اند *